راستے میں جنگ کا خطرہ ہو تو حج کا حکم؟
:سوال
اگر راستہ میں جنگ وغیرہ کی وجہ سے امن نہ ہو تو کیا وجوب حج کا حکم دیں گے؟
: جواب
افواہ کا اعتبار نہیں، اگر واقعی ثابت ہو کہ راستہ میں امن نہیں تو وجوب نہ ہوگا کہ( من استطاع اليه سبیلہ ) ( جو اس کی طرف جانے کی استطاعت رکھے ) صادق نہ آیا مگر یہ اس کے لیے ہے جس پر اسی سال وجوب حج ہوتا اور جن پر پہلے سے واجب ہو لیا ہے اور اپنی کاہلی سے اب تک ادا نہ کیا ان پر سے وجوب ساقط نہیں ہوسکتا، غایت یہ کہ جس سال امن نہ ہونا ثابت ہو، وجوب ادانہ ہو گا جب باذ نہ تعالی امن ہو جائے واجب الا دا ہوگا۔ واللہ تعالیٰ اعلم
READ MORE  شق کی صورت میں قبر کھودنے کا طریقہ

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top