مسجد میں آذان دینے کا حکم؟
سوال
اگررسول الله صلی اللہ تعالی علیہ وسلم اور خلفائے راشدین رضی اللہ تعالی عنہم کے زمانہ میں آذان مسجد کے باہر ہوتی تھی اور ہمارے اماموں نے مسجد کے اندر اذان کو مکروہ فرمایا ہے تو ہمیں اسی پر عمل لازم ہے یا رسم و رواج پر، اور جو رسم و رواج حدیث شریف واحکام فقہ سب کے خلاف پڑ جائے تو وہاں مسلمانوں کو پیروی حدیث وفقہ کا حکم ہے یا رسم و رواج پر اڑار ہنا؟
جواب
ظاہر ہے کہ حکم حدیث وفقہ کے خلاف رواج پر اڑارہنا مسلمانوں کو ہرگز نہ چاہئے ۔
مزید پڑھیں:فقہ حنفی میں آذان مسجد کے اندر دینے کا حکم؟
READ MORE  Fatawa Rizvia jild 03, Fatwa 69

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top