احرام کی حالت میں خوشبودار تمباکو کا استعمال کرنے کا کیا حکم ہے؟
:سوال
احرام کی حالت میں خوشبودار تمباکو کا استعمال کرنے کا کیا حکم ہے؟
: جواب
تمباکو کے قوام میں خوشبو ڈال کر پکائی گئی جب تو اس کا کھانا مطلقاً جائز ہے اگر چہ خوشبودیتی ہو، ہاں خوشبو ہی کے قصد سے اسے اختیار کرنا کراہت سے خالی نہیں اور نظر جانب خوشبو نہ ہو بلکہ حسب عادت دیگر منافع تمباکو کی طرف تو کچھ حرج نہیں اور اگر بے پکائے خوشبو مشک وغیرہ اس میں شامل ہوا اور خوشبو دے رہا ہو جب بھی کفارہ کچھ نہیں البتہ کراہت ضرور ہے، یہ کراہت پیک نگلنے پر موقوف نہیں کہ خوشبو کا آنچل میں باندھنا بھی نا جائز ہے، ہاں اگر مشک اتنی کم پڑی کہ خوشبو نہ دے یا مدت گزرنے سے اتر گئی کہ اب خوشبو جاتی رہی تو کراہت بھی نہیں ۔
READ MORE  مال صدقہ کرنے کے بعد زکوۃ کی نیت کرنے سے زکوۃ ادا ہو جائیگی؟

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top