زکوۃ کی رقم سے بغیر بتائے کسی کا قرض ادا کر دیا اسکا کیا حکم؟

زکوۃ کی رقم سے بغیر بتائے کسی کا قرض ادا کر دیا اسکا کیا حکم؟

:سوال
زید کے ایک رشتہ دار پر قرض تھا، زید نے اس کے قرض میں اپنی زکوۃ کی رقم دے دی ، مگر زید کو نہ بتایا کہ یہ زکوۃ کے پیسے ہیں، کیا زکوۃ ادا ہوگئی ؟
:جواب
اگر زید نے وہ رو پیہ اپنے اس عزیز کو دل میں نیت زکوۃ کر کے دیا تو زکوۃ ادا ہوگئی خواہ (وہ عزیز) کسی خرچ میں صرف کرے، اور اگر بطور خود بلا اجازت اس کے قرضہ میں دیا تو زکوۃ ادانہ ہوگی۔
مزید پڑھیں:مسروقہ چیز پر صدقہ یا زکوۃ کی نیت سے ادا ہو جائے گی یا نہیں؟
READ MORE  یتیموں کو زکوۃ دینا جائز ہے یا نہیں؟

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top