قرآت میں کسی لفظ کو تین مرتبہ دہرایا تو نماز کا حکم؟
:سوال
زید نے دور کعت فجر کی فرض پڑھائی بعد الحمد شریف کے سورت ملانے میں کسی لفظ کو تین مرتبہ تکرار کیا بوجہ مشتبہ ہونے کے ، اب اس کی نماز شرعاً درست ہے یا نہیں ؟ اگر اس کا اعادہ کیا جائے ، اور بعد میں آنے والے لوگ آکر اقتدا کریں بعد والوں کی نماز درست ہوگی یا نہیں؟
:جواب
لفظ کے تکرار سے نماز میں فساد نہیں آتا اعادہ میں جو نئے لوگ ملیں گے ان کی نماز نہ ہوگی لانهم مفترضون خلف منتقل ، ترجمہ: کیونکہ وہ نفل پڑھنے والے کے پیچھے فرض ادا کر رہا ہے۔
READ MORE  قرآت کرتے وقت چند آیات کو ترک کرنا کیسا؟

About The Author

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top