نماز میں جوتے اتارنے والی حدیث
:سوال
زید نے حدیث بیان کی کہ رسول اللہ صل اللہ تعالی علیہ وسلم نے نماز میں جوتا اتارا، مقتدیوں نے بھی اتارا، پیغمبر علیہ السلام نے دریافت کیا تم نے جوتے کیوں اتارنے؟ جواب دیا کہ اتباع کی، فرمایا کہ مجھ سے جبریل علیہ السلام نے کہا کہ جوتے میں ناپا کی ہے۔ کیا زید نے یہ درست حدیث بیان کی؟
:جواب
زید نے بیان حدیث میں غلطی کی حدیث میں لفظ نجاست نہیں لفظ قذ ر ہے یعنی گھن کی چیز جیسے ناک کی آمیزش وغیرہ نجاست ہوتی تو نماز سرے سے پڑھی جاتی کی نماز کا ایک جز باطل ہونا ساری نماز کو باطل کر دیتا ہے۔
(ص189)
READ MORE  بے نمازی کی نابالغ اولاد کا جنازہ جائز ہے یا نہیں؟

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top