مالک نصاب کس مہینے میں زکوۃ ادا کرے گا؟

مالک نصاب کس مہینے میں زکوۃ ادا کرے گا؟

:سوال
ایک شخص پر نصاب کا مالک ہے، زکوۃ کی ادائیگی وہ اپنی جائیداد کی آمدنی سے کرتا ہے، اس کی آمدنی ستمبر یا اکتوبر کو ہوتی ہے، کیا وہ ان زیورات کی زکوۃ ان مہینوں میں ادا کرے گا ؟
:جواب
ستمبر اکتوبر کا اعتبار حرام ہے، نہ اس کے اوقات آمدنی پر لحاظ ، بلکہ سب میں پہلی جس عربی مہینے کی جس تاریخ جس گھنٹے منٹ پر وہ 56 روپیہ کا مالک ہوا اورختم سال تک یعنی وہ عربی مہینہ وہی تاریخ وہی گھنٹہ منٹ دوسرے سال آنے تک اُس کے پاس نصاب باقی رہاوہی مہینہ تاریخ منت اس کے لیے زکوۃ کا سال ہے، آمدنی کا سال کبھی سے شروع ہوتا ہوو ، اس عربی مہینہ کی اس تاریخ منٹ پر اس کی زکوۃ دینا فرض ہے۔
مزید پڑھیں:تجارت میں زکوۃ صرف نفع پر ہے یا کل مال تجارت پر؟
READ MORE  زکوۃ دیئے مال پر اگلا سال آنے پر کیا دوبارہ سے زکوۃ ہوگی؟

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top