جس کے پاس ذاتی گھر ہو اسے زکوۃ دے سکتے ہیں یا نہیں؟

جس کے پاس ذاتی گھر ہو اسے زکوۃ دے سکتے ہیں یا نہیں؟

:سوال
ایک ایسا شخص کہ جس کا اپنا ذاتی مکان ہے اور اس مکان کی سالانہ آمدنی سوروپے ہے مگر بوجہ عیالدار ہونے کے اس کا خرچ تین سوروپے سالانہ ہے تو ایسے شخص کو ر کو ۃکے مال سےامداد دینا جائز ہے یا نہیں؟
:جواب
ہاں اُسے زکوۃ سے دےسکتے ہیں اگر چہ اُس کی حاجت سکونت کا مکان ہزار روپے کا ہو یا کرائے پر چلا لے کہ مکان سے ہزار روپے سالانہ آتا ہو اور اُس کا ضروری مصارف و نفقہ اہل و عیال سے اتنا نہ بچتا ہو کہ وہ اپنی حاجت اصلیہ سے فارغ 56 روپے کا مالک ہو۔
مزید پڑھیں:زکوۃ کا پیسہ منافع کی غرض سے تجارت میں لگا سکتے کہ نہیں؟
READ MORE  سادات پر زکوۃ حرام ہونے کی وجہ کیا ہے؟

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top