ایصال ثواب پر اجرت کا جائز طریقہ
:سوال
اس کا کیا حل کیا جائے؟
:جواب
جب صراحتہ معروف کی نفی کر دے تو مشروط نہیں رہے گا، مثلا قاری سے صاف کہہ دیا جائے کہ دیا جائے کہ دیا کچھ نہ جائے گایا وہ کہہ دے کہ میں لوں گا کچھ نہیں، اس کے بعد پڑھے پھر جو چاہیں دے دیں وہ اجرت میں داخل نہ ہوگا، لان الصريح يفوق الدلالة ( اس لیے کہ صریح کا درجہ دلالت سے اوپر ہے )
READ MORE  Fatawa Rizvia jild 06, Fatwa 454

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top