اکیلے نمازی کا دو ستونوں کے درمیان کھڑے ہونے میں حرج نہیں
:سوال
نمازی اکیلے نماز پڑھ رہا ہو تو اسے دو ستونوں کے درمیان کھڑے ہونے میں حرج نہیں اس پر کیا دلیل ہے ؟
:جواب
 عمدۃ القاری میں ہے اذکان منفردا لاباس في الصلاة بين الساريتين اذا لم يكن في جماعة ” جب تنہا نماز ادا کر رہا ہو تو دوستونوں کے درمیان نماز ادا کرنے میں حرج نہیں جبکہ وہ جماعت میں نہ ہو۔
خود حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم جب کعبہ معظمہ تشریف لے گئے،دوستونوں کے درمیان نماز پڑھی کما فی ثبت فی الصحاح عن ابن عمر عن بلال رضی اللہ تعالی عنہم ، ترجمہ جیسا کہ صحاح میں حضرت ابن عمر رضی اللہ تعالی عنہما نے حضرت بلال رضی اللہ تعالی عنہ سے روایت کیا ہے۔
مزید پڑھیں:عید گاہ کی سمت درست نہ ہو تو نماز کا حکم
READ MORE  کیا طعام میت دل کو مردہ کرتا ہے؟

About The Author

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top