ایک مریض کو دن میں سخت تکلیف ہوئی، جس کی وجہ سے اسے دوا پلا دی گئی، اب اس روزے کی قضاء ہوگی یا کفارہ؟

ایک مریض کو دن میں سخت تکلیف ہوئی، جس کی وجہ سے اسے دوا پلا دی گئی، اب اس روزے کی قضاء ہوگی یا کفارہ؟

:سوال
ایک مریض کو دن میں سخت تکلیف ہوئی، جس کی وجہ سے اسے دوا پلا دی گئی، اب اس روزے کے بدلے اس مریض کو کیا کرنا چاہئے ، ساٹھ روزے رکھے یا ساٹھ مساکین کو کھانا کھلائے؟
:جواب
اس صورت میں نہ ساٹھ روزے ہیں نہ ساٹھ مسکین غرض کفارہ نہیں صرف اُس روزہ کی جو توڑا اور ان روزوں کی جو نہ رکھے قضا ہے ہر روزہ کے بدلے ایک روزہ بس ۔
مزید پڑھیں:صبح لیٹ آنکھ کھلی جلدی سے کھانا کھا کر روزہ رکھا اور آذان شروع ہوگئی تو روزہ کا کیا حکم ہوگا؟
READ MORE  Fatawa Rizvia jild 05, Fatwa 386

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top