اگر تراویح میں کوئی بالغ حافظ نہ ملے تو کیا کریں؟
:سوال
اگر تراویح میں ختم قرآن کی سنت کو حاصل کرنے کے لئے کوئی بالغ حافظ نہ ملے تو کیا کریں؟
:جواب
ہاں اگر حافظ صحیح خواں سوانا بالغ کے نہ ملتا ہوتو باتباع مشائخ بلخ سنت ختم ( قرآن ) حاصل کر لیں ۔ فان الادأ على قول خير من الترك مطلقاً، ترجمہ: کیونکہ ایک قول کے مطابق ادا کرنا مطلقاً ترک کرنے سے بہتر ہے۔ در مختار میں ہے” الادء الجائز عند البعض أولى من الترك كما في القنية وغيرها ” ترجمہ: بعض کے نزدیک جائز ادا، ترک سے اولی ہے، جیسا کہ قنیہ وغیر ہا میں ہے۔
( در مختار، ج 1، ص 61 ،مطبع مجتبائی ، دیلی)
پھر مناسب یہ ہے کہ بلحاظ مذہب اصح اعاده تراویح کر لیں ليحصل الاحتياط بالمقدر الميسور ، ترجمہ: تاكہ بقدر آسانی احتیاط حاصل ہو جائے۔
READ MORE  Fatawa Rizvia jild 06, Fatwa 436

About The Author

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top