حرام کھانا کھا کر روزہ رکھا اور افطار کیا تو اسکا کیا حکم ہوگا؟

حرام کھانا کھا کر روزہ رکھا اور افطار کیا تو اسکا کیا حکم ہوگا؟

سوال
کسی نے حرام کھانا کھا کر روزہ رکھا اور حرام چیز سے افطار کیا، فرض روزہ اس پر سے ساقط ہوا ہے یا نہیں؟
جواب
بیشک صورت مستفسرہ میں فرض ساقط ہو گيا
فان الصوم انما هو الامساك من المفطرات الثلثة من الفجر الى الليل
ترجمہ: روزہ صبح سے لے کر شام تک تین چیزوں یعنی کھانا، پینا اور ہمبستری سے رک جانا ہے۔
سحری کھانا یا افطار کرنا روزے کی حقیقت میں داخل نہ اس کی شرائط سے، پھر اگر یہ مال حرام سے واقع ہوئی تو اس کا گناہ جدا رہا مگر سقوط فرض میں شبہ نہیں۔
واللہ تعالیٰ اعلم
مزید پڑھیں: تراویح سنانے والے کا روزہ نہ رکھنے کا کیا حکم ہے؟
READ MORE  بعض لوگ کہتے ہیں کہ آذان دیتے وقت دائیں ہاتھ کی طرف کو ہونا چاہئےاور بعض کہتے بائیں ہاتھ کو، اس میں شرعاً کیا حکم ہے؟

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top