بے نمازی کی نماز جنازہ نہ پڑھنا کیسا ہے؟
:سوال
بے نمازی کی نماز جنازہ نہ پڑھنا کیسا ہے؟
:جواب
ایمان وقیح عقائد کے بعد جملہ حق اللہ میں سب سے اہم واعظم نماز ہے جمعہ وعیدین یا بلا پابندی پنجگانہ پڑھنا ہر گز نجات کا ذمہ دار نہیں ، جس نے قصداً ایک وقت کی چھوڑی ہزاروں برس جہنم میں رہنے کا مستحق ہوا، جب تک تو بہ نہ کرے اور اس کی قضا نہ کرلے مسلمان اگر زندگی میں اسے یکلخت چھوڑ دیں ، اس سے بات نہ کریں، اس کے پاس نہ بیٹھیں تو ضرور وہ اس کا سزاوار ( حقدار ) ہے ۔ مگر بعد موت ہر سنی صحیح العقیدہ کو غسل و کفن دینا، اس کے جنازے کی نماز پڑھنا الا ما استثنی ليس هذا منهم (سوائے وہ جن کا استثناء کیا گیا ہے اور یہ ان میں سے نہیں) فرض قطعی علی الکفایہ ہے۔
اگر سب چھوڑ دیں جن جن کو اطلاع تھی سب گنہ گار و تارک فرض ومستحق عذاب ہوں گے، جس نے تین مسلمانوں کو بے نماز دفن کر دیا فاسق، مرتکب کبیرہ، مستوجب سزائے شدید ہوا ، بے نماز کہ نماز کو شرط جانتا ہو اس کی تحقیر نہ کرتا ہوا گر چہ نفس و شیطان کے پھندے میں آکر نہ – پڑھتا ہو مرتکب کبائر ہے، مستحق عذاب نا ر ہے، مگر کافر نہیں باغی نہیں ، ڈاکو نہیں ، ایک تباہ کار مسلمان ہے۔ ( مزید ایک مقام پر فرماتے ہیں ) لا الہ الا اللہ مسلمان اگر چہ بے نماز ہو اس کے جنازے کی نماز مسلمانوں پر فرض ہے۔ اگر کوئی نہ پڑھے گا جتنوں کو خبر ہو سب گنہ گارو تارک فرض رہیں گے، ہاں اگر زجر کے لئے علماء خود نہ پڑھیں دوسروں سے پڑھا دیں تو بیجا نہیں، اور اگر ان کے نہ پڑھنے سے اور بھی کوئی نہ پڑھے یا ان کو بھی منع کریں تو یہ علماء سحق عذاب نار ہوں گے، بلکہ جہال سے زیادہ۔
READ MORE  زکوتی روپے سے لحاف میں روئی ڈلوا کر غریبوں کو دیں تو جائز ہے یا نہیں؟

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top